استحکام کی جانب پیش قدمی: پانی، صفائی، اور صحت کے مسائل سے نمٹنے کے لیے بیات فاؤنڈیشن نے خوبصورت افغانستان حکمت عملی اقدام کی شروعات کردی؛ ابتدائی توجہ دریائے کابل کی بحالی پر مرکوز

کابل، افغانستان، 22 اکتوبر 2012ء / پی آر نیوز وائر –

افغانستان کے نوجوان، خواتین، غریب اور عمر رسیدہ  افراد کے معیار زندگی کو بہتر بنانے کے لیے وقف 501 سی (3) خیراتی ادارے بیات فاؤنڈیشن کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر فاطمہ بیات نے 12 اکتوبر کو فاؤنڈیشن کے سالانہ عشائیہ کے موقع پر  2013ء میں فاؤنڈیشن کے لیے ایک نئی حکمت عملی اقدام  خوبصورت افغانستان شروع کرنے کا باضابطہ اعلان کر دیا ہے۔

محترمہ بیات نے کہا کہ “افغانستان زبردست قدرتی وسائل اور خوبصورتی کا حامل ایک  ہے۔ بدقسمتی سے بدانتظامی، بے حسی، مایوسی، اور جہالت کے باعث افغانستان کی  قدرت کے انعامات کو کثرت استعمال، آلودگی، اور غفلت کی زد میں ہیں۔  بہت سے  افغان باشندے آج پینے کے پانی کے ذرائع تلاش کرنے کے لئے کوششیں کر رہے ہیں  اور  آلودہ پانی خناق، ہیضہ اور ملیریا جیسی بیماریوں کے پھیلاؤ کا ایک اہم عنصر بن گیا ہے۔ اس سے نمٹنے میں مدد کے لیے ہم 2013ء کے لئے ایک نئی حکمت عملی  اقدام خوبصورت افغانستان: تعلیم۔ بااختیار۔ ماحولیات۔ شروع کرنے کا اعلان کرتے ہوئے خوشی محسوس کر رہے ہیں۔ ہمیں یقین ہے کہ یہ پروگرام مستقبل کی نسلوں کے لئے قدرتی خوبصورتی اور وسائل کے دیرپا میراث  کو یقینی بنانے کے لئے میں مدد کے لیے افغان باشندوں کو قدرتی ماحول کے ساتھ موجودہ وقت سے زیادہ مفید اور پائیدار طریقوں میں مشغول کرنے   کے لئے مدد کرے گا۔”

پروگرام کا مشن  افغان باشندوں کو مصروف، بااختیار ، تعلیم یافتہ اور متحرک   کرنا ہے –خاص طور پر ان کو لوگوں کو جو زیادہ  خطرے کا شکار ہیں – افغانستان کے لیے امید، فخر، غیرت، خوبصورتی اور اقتصادی تحفظ کو بحال کرنے کی غرض سے اپنی برادری کے ماحول  کے لیے کام کریں اور بھاری ذمہ داری  اٹھائیں ۔ یہ “امبریلا” اقدام کی طرح بنایا گیا ہے جو کہ  شامل فنڈنگ، انتظام کی شروعات، انتظام ، فراہم کرنے اور متعدد ماحولیات منصوبوں  کے لیے معاونت کا فروغ کرے گا جو برادریوں  کے رویوں میں تبدیلی اور بہتری لائے  گا۔ یہ  افغان باشندوں کی جانب سے، افغان باشندوں کے لیے بننے والے پروگراموں پر توجہ مرکوز کرے گا اور لوگوں اور قدرت کے درمیان فطری تعلق کو تسلیم کرے گا۔منصوبے  ماحولیاتی مسائل کو زیادہ سے زیادہ منظم  کرنے کے لیے رویوں میں تبدیلی  کے لیے مراعات فراہم کرے گا۔

کامیابی کے اصولوں جیسے تعلیم، انفرادی ذمہ داری، عوامی – نجی شراکت داری اور خطرے کا شکار افغانستان  کی خواتین اور نوجوان پر مرکوز پائیدار اقتصادی معاونت  خوبصورت افغانستان کا ابتدائی قدم دریائے کابل کی بحالی ہوگا۔ فاؤنڈیشن  فضول طریقوں کا خاتمہ کا انتظام کرنے، نئے – بہت حفظان صحت – گندے پانی اور نکاسی کو سنبھالنے کے طریقوں، افغانستان کی تاثیر اور قدرتی صحت کی علامت کے طور پر آبی ذرئع سے قومی وقار کا احساس بحال کرنے کا انتظام کرنا ہے۔

بیات فاؤنڈیشن کے بارے میں

ریاستہائے متحدہ امریکا میں  قائم  ایک 501 سی (3) خیراتی ادارہ بیات فاؤنڈیشن 2005ء سے  افغان عوام کی فلاح  کے فروغ میں کوشاں ہے۔ احسان بیات اور فاطمہ بیات کی قائم اور  ہدایت یافتہ فاؤنڈیشن  افغانستان کے نوجوانوں، خواتین، غریب اور عمر رسیدہ  افراد کے معیار زندگی کو بہتر بنانے کے لیے وقف 200 سے زائد منصوبوں  میں حصہ لے چکی ہے۔  منصوبوں میں ضرورت مند علاقوں میں نئی سہولیات اور پائیدار بنیادی ڈھانچوں کی تعمیر اور صحت، تعلیم، اقتصادی اور ثقافتی پروگراموں کا فروغ شامل ہے۔ امدادی اقدامات کے علاوہ احسان اللہ بیات نے 2002ء میں افغان وائرلیس (اے ڈبلیو سی سی) – ٹیلی فون سسٹمز انٹرنیشنل انکارپوریٹڈ (ٹی ایس آئی) اور وزارت مواصلات کا مشترکہ منصوبہ – قائم کیا جو افغانستان میں اولین جی ایس ایم وائرلیس و انٹرنیٹ فراہم کنندہ تھی،  اور بعد ازاں آریانہ ریڈیو اینڈ ٹیلی ویژن نیٹ ورک (اے ٹی این) قائم کیا جس میں آریانہ ریڈیو (ایف ایم 93.5) شامل ہے۔ مزید معلومات کے لیے ای میل کریں info@bayatfoundation.org۔

رابطہ: مونٹگوموری سائمس، m.simus@tsiglobe.com، +1-702-809-6772۔

Leave a Reply